World Shia Forum

Identity, Equality, Unity

Hazara Voice for Justice and Peace

Editors Note: World Shia Forum condemns the senseless Genocide of Shia Hazara in the strongest possible terms. We share with our readers the voice of Shia Hazara , a cry for help. We call upon all Pakistan state organs and human rights organizations to end Shia Genocide and Shia Hazara Genocide in Pakistan.

Saturday, 4 August 2012

کیوں مارا جاتا ہے


 
 
ناصر کے قلم سے
 
کوئٹہ میں شیعہ ہزارہ آبادی پر مسلط دہشت گردانہ کاروائیوں کا مقصد کچھ بھی ہو، ان کے پیچھے جو بھی عوامل ہوں، بات یہاں آکر رک جاتی ہے کہ اس خون آشام دور کے خاتمے کا کیا حل ہوسکتا ہے، تو کسی بھی دانشمند اور انسان دوست کی نظر میں ایک ہی حل ہوسکتا ہے اور وہ ہے فوری انصاف، ہر طرح کی مصلحت سے پاک فیصلے کی قوت جو کوئٹہ کے مظلوم باسیوں کے دکھ کا مداوا ہوسکتا ہے
ایک دہائی سے زیادہ اس بھیانک اور غیر انسانی اور قبیح فعل پر اب تک لعن طعن کا سلسلہ ہر سطح پر جاری ہے، بالخصوص سوشل میڈیا پر درد دل رکھنے والوں کی خدمات کسی ڈھکی چھپی نہیں، تجزیے اور مباحث کی تعداد سوشل میڈیا کے ساتھ قومی و بین الاقوامی پرنٹ اور الیکٹرانک میڈیا پر دہشت گردانہ کاروائیوں اور حکومتی بے حسی کو ثابت کرنے کے لئے کافی ہے لیکن نقارخانے میں طوطی کی کون سنتا ہے، آج تک کوئی قابل ذکراور بھر پور فیصلے کا نہ آنا ملک ، پاکستانی سماج، اور سیاسیات پر بد نما داغ بنتا جارہا ہے
 
پاکستان کے طول و عرض میں جاری ہر طرح کی دہشت گردی کو مختلف خانوں اور حوالوں میں تقسیم کا مطلب مکروہ اور بدصورت دہشت گردوں کو کھلی چھوٹ دینے کی مترادف ہے، کراچی ، گلگت بلتستان، خیبر پختونخوا، پنجاب اور کوئٹہ بلوچستان سمیت کوئی بھی پاکستانی ماورائے عدالت قتل میں مارا جانا فقط انسانی تاریخ کا ایک تاریخ باب ہے جو یقینا شرمناک بھی ہے
پاکستان کی بقا کے لئے ضروری ہے کہ اس سوہنی دھرتی پر خوبصورت لوگوں کو احساس تحفظ دیا جائے اور کیوں، کیسے اور کب جیسے سوالات سے اس صورت حال کو گھمبیر اور لوگوں کو مزید کنفیوز نہ کیا جائے، پانی سر سے گزر چکا ہے، اس وقت صرف فیصلے کی گھڑی ہے، اس موقع پر تمام سیاسی سماجی اداروں اور انسانی حقوق کی تنظیموں سے یہی اپیل کی جاسکتی ہے کہ ان گھنائونے غیر انسانی اقدامات کے تدارک کے لئے فیصلہ کن انداز میں پریشر کو کام میں لائیں….انسانیت سسک سسک کر مر رہی ہو اور ہم فقط اعداد و شمار اور تجزیہ اور تحلیل میں وقت گزاری کی روش اپنائے رکھے تو یقینا تاریخ ہمیں نہ صرف معاف نہیں کرے گی

About alitaj

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s

%d bloggers like this: